What is Isotretinoin? ( in Urdu ) آئیسوٹریٹینوئن کیا ہے اور یہ کیسے کام کرتی ہے ؟


Pakistan / پاکستان میں آئیسوٹریٹینوئن (Isotretinoin) کے مندرجہ ذیل برانڈ دستیاب ہیں۔

ACCURE, ACCUTANE, ACNETRAC, ACNEWIN, ACNO, ACNOGEN, AKNEFIN, ARYNOIN, BEFAST, FREAC, ISO-A, ISODERM, ISOFACE, ISOLEX, ISOLIT, ISOMERA, ISONAS, ISONEX, ISOTOP, ISOWAN-T, ISOZAM, ORATANE, RECUTANE, RECUTE, RESOFT, ROACADVAN, ROACCUTANE, SONION, SORETIN, SAITRIN, TRESTON, VERION.

آئیسوٹریٹینوئن ایک مصنوعی طور پر تیار کی جانے والی دوا ہے اور اس کو ادویات کےRetinoids گروپ میں شامل کیا جاتا ہے۔آئیسوٹریٹینوئن وٹامن اے(Vitamin A) کی ایک قسم (13-cis-retinoic acid) ہے جو جِلد میں موجود تیل بنانے والے غدودوں (sebaceous glands) پر اثر انداز ہو کر تیل (sebum) بنانے کے عمل کو کم کر دیتا ہے۔ ​اس کے علاوہ یہ جلد میں سوزش کو کم کر کے ایکنی کو بہتر بناتی ہے۔

آئیسوٹریٹینوئن (Isotretinoin) کا استعمال شدید قسم کی ایکنی میں رائج ہے، تاہم اس کا استعمال اس کے علاوہ بھی بہت سی بیماریوں میں کیا جاتا ہے۔ آئیسوٹریٹینوئن کا استعمال شروع کرنے کے فوراً بعد مریض کی ایکنی کی شدت میں اضافہ دیکھنے میں آ سکتا ہے، تا ہم یہ عارضی ہوتا ہے اور استعمال کو جاری رکھنے سے زیادہ تر مریضوں میں بہتری آنے لگتی ہے۔

آئیسوٹریٹینوئن کے اِستعمال کے دوران مہینے میں کم از کم ایک دفعہ اپنا Fasing Lipid Profile ٹیسٹ ضرور کروائیں، کیونکہ آئیسوٹریٹینوئن خون میں موجود Lipids کو بڑھانے کا سبب بنتی ہے جو کہ خطرناک ہو سکتا ہے۔

حال ھی میں سامنے آنے والی کچھ طبی تحقیقات کے مطابق آئیسوٹریٹینوئن کے استعمال سے خون میں یورک ایسڈ (Uric Acid) کی سطح بلند ھو سکتی ھے، لہٰذا آئیسوٹریٹینوئن کے استعمال کے دوران یورک ایسڈ کا ٹیسٹ کرواتے رھنا بہتر ھے۔

ضروری نوٹ

آئیسوٹریٹینوئن کو ہرگز کسی معالج کے مشورہ کے بغیر استعمال مت کریں ۔ مزید یہ کہ آئیسوٹریٹینوئن کے کیپسول اپنے کسی بھی جاننے والے کو بغیر اپنے طبیب کے مشورہ کے استعمال کرنے کو ہرگز مت کہیں۔

خواتین میں آئیسوٹریٹینوئن (Isotretinoin) کا استعمال

حاملہ خواتین میں آئیسوٹریٹینوئن کی محض ایک خوراک بھی پیدا ہونےوالے بچے میں پیدائشی عیب پیدا کر سکتی ہے, نہ صرف یہ بلکہ بچے کی موت بھی واقع ہو سکتی ہے ۔ آئیسوٹریٹینوئن سے پیدا ہونے والے پیدائشی نقائص میں بچے کے کان، آنکھیں، چہرہ، کھوپڑی، دل اور دماغ کا خراب ہونا شامل ہے۔ اس لیئے آئیسوٹریٹینوئن کا استعمال شروع کرنےسے پہلے اس بات کا یقین کر لینا ضروری ہے کہ آئیسوٹریٹینوئن استعمل کرنے والی خاتون حاملہ نہ ہو۔ اس مقصد کیلیئے ایک پریگنینسی ٹسٹ کروانا لازمی ہے، تاکہ یقین کیا جا سکے کہ حمل نہیں ہے۔

ایسی خواتین جِن کی عنقریب شادی ہونے والی ہو، اُن کو آئیسوٹریٹینوئن کا استعمال شادی سے کم از کم ایک ماہ پہلے بالکل بند کر دینا چاہیئے۔ وہ خواتین جن میں آئیسوٹریٹینوئن کے استعمال کے دوران حمل ٹھہرنے کے ذرا سے بھی امکانات موجود ہوں، اُن میں اِس کے استعمال کے دوران کم از کم دو اقسام کے مانع حمل طریقے بیک وقت ضرور استعمال کرنے چاہییئں۔ اِن مانعِ حمل طریقوں کا استعمال، آئیسوٹریٹینوئن کے شروع کرنے سے کم از کم ایک ماہ پہلے شروع کرنا چاہیئے اور آئیسوٹریٹینوئن کے ختم کرنے کے کم از کم ایک ماہ بعد تک جاری رکھنا چاہیئے۔

آئیسوٹریٹینوئن (Isotretinoin) شروع کرنے سے پہلے مندرجہ ذیل کیفیات کے بارے میں اپنے معالج کو ضرور آگاہ کریں

اگر آپ کو دل کا مرض لاحق ہو یا کولیسٹرول زیادہ ہو

اگر آپ کو ڈیپریشن ہو

اگر آپ کا دمہ کا مرض ہو

اگر آپ کو جگر کا مرض ہو

اگر آپ کو ذیابیطس ہو

اگر آپ کو آسٹیوپوروسس ہو

اگر آپ کو inflammatory bowel disease, ulcerative colitis, Crohn's disease ہو

آئیسوٹریٹینوئن کا استعمال ۱۲ سال سے کم عمر بچوں میں مناسب نہیں ہے۔ آیا آئیسوٹریٹینوئن ماں کے دودھ کے ذریعے بچے تک پہنچ پاتی ہے یا نہیں، اس بارے میں ابھی معلومات کم میسر ہیں، تاہم آئیسوٹریٹینوئن کے استعمال کے دوران بچے کو دودھ نہیں پلانا چاہیئے۔

چند ضروری ھدایات

آئیسوٹریٹینوئن (Isotretinoin) لعابی جھلی (Mucosa) پر اثر انداز ہو کر اسے خشک کرنے کا سبب بنتی ہے، اس لیئے تقریباً 75 فیصد لوگ اس کا استعمال شروع کرنے کے بعد منہ، آنکھیں اور جِلد کے خشک ہونے کی شکایت کرتے ہیں۔ یہ خشکی اس بات کی نشانی ہوتی ہے کی آئیسوٹریٹینوئن نے اپنا کام شروع کر دیا ہے۔

آئیسوٹریٹینوئن کے استعمال کے دوران جلد کی حساسیت بڑھنے کی وجہ سے جلد سورج سے زیادہ آسانی سے متاثر ہو سکتی ہے، اس لیئے اس کو رات کے وقت کھانا زیادہ مناسب خیال کیا جاتا ہے۔

آئیسوٹریٹینوئن کے استعمال کے دوران اگر سردرد ہو، یا توجہ مرکوز کرنے میں مشکل ہو یا موڈ میں واضع تبدیلی محسوس ہو، تو اپنے معالج کو فوراً آگاہ کریں۔

آئیسوٹریٹینوئن کے استعمال کے فوراً بعد چہرے کی کسی بھی قسم کی سرجری سے 3 سے 6 ماہ تک اجتناب بہتر ہے ۔

آئیسوٹریٹینوئن کے استعال کے دوران اور ایک مہینہ بعد تک خون کا عطیہ مت کریں۔


Skype

Clicking Subscribe button will subscribe you to our marketing campaigns as well.