• Dr. Shakeel Zulfiqar ماہرِ امراضِ جلِد، بال و ناخن

    ₨500

What is Omeprazole? ( in Urdu ) اومیپرازول کیا ہے اور یہ کیسے کام کرتی ہے؟


پاکستان / Pakistan میں اومیپرازول (Omeprazole) کے مندرجہ ذیل برانڈ دستیاب ہیں

ACEZOLE, ACIDRIN, AKSOZOL, ALOMEP, ALPAZOL, AMAZOLE, ANMOL, ANTRA, ANZO, AZITRIX, BENZIM, BEPRAZOLE, BERIZOLE, BOLD, BRIZOLE, BROMEP, CAPZOL, CIBRA, CIDPRO, CISEC, COOZIP, DELPROZ, DELSER, DINAAR, DYSOZOL, EFOME, EMPEROLE, ENCID, EPENT, EPRA, ESELAN, ESOWIN, ETIPRO, FARMPRA, FEDAZOL, FEGRAN, FORTIFY, FYMEZOLE, GAMP, GARAZOLE, GARD, GLAVERAL, HAMAZOL, HANSOL, HANZOL, HEALER, HELEZOL, HUPRA, INGIS, IRZAZOLE, IZMEPRA, KARZOLE, KLOFIX, LAPIZOLE, LOC-H, LOCOREX, LOMPER, LOPROT, LOSEC, LOZAL, LOZAMEP, LOZENA, LOZIP, MAAG, MACOMEZ, MARK, MEBRAZOLE, MEGAZOLE, MEPRA, MEPRASCOT, MEPRAWIN, MEPRAZOL, MEPROLIVE, METZAN, MOPIRIXL, NAFZOLE, NENSEC, NEUSEC, NILCID, NOAZOL, NOCTIS, NONCID, NORAN, NORANI, NOUL, NOVISAC, NURZOL, 0-CARB, O-CID, OBSOZOLE, OHAB, OLTRIX, OM, OMAK, OMAPREN, OMATOLE, OMCAP, OMCOOL, OMCURA, OME MED, OMEBRAIN, OMEC, OMECER, OMED, OMEFILL, OMEGA, OMEGA CAPSULE, OMEGUT, OMEHEIM, OMEL, OMELCID, OMELINZ, OMENZA, OMEPAK, OMEPEC, OMEPEFLORE, OMEPRAGEN, OMEPRAL, OMEPRAVAL, OMEPRAZAL, OMEPRAZOLE, OMEPROWAN, OMEPZA, OMERA, OMEROWN, OMESEC, OMESTOCK, OMETON, OMETOR, OMEZOL, OMEZOMAN, OMIGOOD, OMIT, OMOL, OMPER, OMPIL, OMRAGIL, OMRAZO, OMRAZOLE, OMREL, OMSOD, OMZE, OPARA, OPICAP, OPRA, OPRAZOLE, OPRIL, OPZA, ORCAP, OSYD-20, OWEL, OZEM, OZKER, OZOP, OMEPRAZOLE USES, OMEPRAZOLE CAPSULE, PEPRAZOLE, PEPZOL, PERL, POAMI, PP.ZOLE, PPI-20, PRAZOL, PREZIT, PRISMA, PRO HIBIT, PROBIOTOR, PROBITOR, PROCED, PROCEPTIN, PROLOC, PROMY, PROPI, PROPRAZOL, PROTOLE, PROZA, PYMER, PZOLE, RAMEZOL, RAXAR, RAZOLE, RAZOMEP, REDULEX, RETROT, REZAL, RISEK, RIZEK MEDICINE, ROMEPRAZOLE, RULING, SAFOMEP, SANAMIDOL, SANTE, SEGAZOLE, STOMEP, SUNDER, SYDROL, SYNZOLE, TEMEROL, TEPH, TIMEZOL, TROLOC, UL-RID, ULSAZOLE, UNIPRAZOLE, UZOL, VALUPRAZOLE, VAPRA, VINZOLE, WEPRAZOL, WISPRAZOL, WIZOL, XEROSEC, XOPRA, Z-PRAL, ZALAIM, ZAMPRA, ZAPROLE, ZEPEP, ZES, ZOGER, ZOGITAL, ZOGLIT, ZOLACID, ZOLAPT, ZOLAT, ZOLBI, ZOLCARE, ZOLCER, ZOLOMP, ZOLPRO, ZOLTAR, ZOPROL, ZORAL.

اومیپرازول (Omeprazole) کا تعلق ادویات کے گروپ Proton Pump Inhibitors سے ہے اور اس کے استعمال سے معدہ میں تیزابیت کم ہو جاتی ہے۔ اومیپرازول معدہ میں پاےٴ جانے والے parietal cells میں موجود Proton Pump پر اثر انداز ہو کر تیزاب کے بننے کے عمل کو کم کر دیتی ہے ۔ اس کا استعمال اُن طبی کیفیات میں کروایا جاتا ہے جن میں معدہ میں تیزابیت بڑھ جاتی ہے۔ اس کی ایک عام مثال (Gastroesophageal reflux disease (GERD ہے ۔ معدہ میں السر ہونے کی صورت میں اومیپرازول کو اینٹی بایئوٹک ادویات کے ساتھ بھی استعمال کروایا جاتا ہے ۔

جسم میں داخل ہونے کے بعد، اومیپرازول کی زیادہ مقدار جگر میں ٹوٹ پُھوٹ کا شکار ہوتی ہے اور تقریباً 80 فیصد دوا گرُدوں کے ذریعہ جسم سے خارج ہوتی ہے۔ اومیپرازول کھانے کے تقریباً ایک گھنٹے کے بعد اومیپرازول کی تقریباً آدھی مقدار جسم سے خارج ہو چکی ہوتی ہے۔

حاملہ خواتین میں اومیپرازول (Omeprazole) کے اِستعمال سے مُتعلق تحقیق فِی الحال محدود ہے۔ اس لیئے حاملہ خواتین میں اس کا استعمال صرف اشد ضرورت کے تحت کیا جانا چاہیئے۔ چونکہ اومیپرازول کی کُچھ مقدار ماں کے دودھ میں خارج ہوتی ہے، اِس لیئے اِس دوا کا استعمال دودھ پلانے والی ماؤں میں احتیاط سے کرنا چاہیئے، کیونکہ یہ دوا دودھ کے راستے بچے تک پہنچ سکتی ہے۔ ایک سال سے کم عمر بچوں میں اس دوا کا اِستعمال ڈاکٹر کی ھدایت کے بغیر نہیں کروانا چاہیئے۔

چونکہ ذہنی دباؤ یا ڈیپریشن کی حالت میں اِس بات کا خطرہ ہوتا ہے کہ معدہ میں تیزابیت بڑھ جائے گی، (جس سے معدہ میں السر (زخم) بننے خدشہ ہوتا ہے)، اِس لیئے بعض معالج ذہنی دباؤ/ڈیپریشن کی کیفیت میں احتیاطی طور پر بھی یہ دوا شروع کروا دیتے ہیں۔

وہ افراد جِن کی عمر 50 سال سے زیادہ ہو اور جِنہوں نے اومیپرازول (Omeprazole) کا اِستعمال طویل مُدت کیلیئے کیا ہو، اُن میں کولہے، کلائ اور ریڑھ کی ہڈی کے فریکچر ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔

سائڈ افیکٹ (Side Effects)

اومیپرازول سے مندرجہ ذیل سائڈ افیکٹ سامنے آ سکتے ہیں

- سر چکرانا

- سر درد

- تھکاوٹ کا احساس

- متلی

- پیچش

- پٹھوں کا درد

- قبض

- نیند کم آنا

- پیٹ میں درد

- منہ کا خشک ہونا

- ڈیپریشن

- جوڑوں میں درد

حالیہ تحقیق کے مطابق اومیپرازول (Omeprazole) کے اِستعمال سے خون میں میگنیشیم (Magnesium) کی سطح کم ہو سکتی ہے۔ اِس سے مندرجہ ذیل مسائل پیدا ہو سکتے ہیں:

۔ قلب کی حرکت بے ترتیب ہونا

۔ اعصاب کے مسائل (مثلاً دورے پڑنا)

۔ پٹھے اکڑنا یا پٹھوں میں کمزوری محسوس ہونا

۔ Osteomalacia

۔ Osteoporosis

۔ خون میں کیلشیم کی سطح کم ہونا

۔ سر چکرانا

۔ کھانسی ہونا یا گلا گُھٹتا ہوا محسوس ہونا

۔ خون میں پوٹاشیم کی سطح کم ہونا

۔ پیچش

ایسی کیفیت ہو تو اپنے معالج سے رجوع کریں۔ مزید یہ کہ جو لوگ لمبے عرصے سے اومیپرازول کا اِستعمال کر رہے ہوں، اُن کو احتیاطاً Serum Magnesium Levels کا ٹیسٹ وقفہ وقفہ سے کرواتے رھنا چاہیئے۔

اس گروپ میں شامل دیگر ادویات کے نام مندرجہ ذیل ہیں:

Esomeprazole

Lansoprazole

Pantoprazole

Rabeprazole

Esomeprazole

Dexlansoprazole

Tenatoprazole

Ilaprazole

ابھی شیئر کریں اور دوسروں کی آگاہی میں اپنا کردار ادا کریں۔


Skype

Clicking Subscribe button will subscribe you to our marketing campaigns as well.