What is Scabies? Kharish ka ilaj in Urdu سکیبیز کی خارش کیا ہے اور اس کی علامات اورعلاج کیا ہے؟


سب سے پہلی اور ضروری بات : ہر خارش سکیبیز نہیں ہوتی!

سکیبیز (scabies) ہر عمر کے افراد میں دیکھنے کو ملتی ہے، تاہم یہ اُن لوگوں میں زیادہ عام ہے جو اداروں میں اکٹھے رہتے ہیں۔ کالجوں کے ھاسٹل میں، فوجیوں کی بیرکوں میں اور دینی تعلیم کے مدرسوں میں سکیبیز کا پھیل جانا عام سی بات ہے۔

جِلدی امراض کے معالج کے طور پر میرا یہ مشاہدہ ہے کہ سکیبیز کے مریض صُبح صُبح میرے کلینک آنے والے پہلے پہلے مریضوں میں شامل ہوتے ہیں۔ شائد اس کی وجہ یہ ہے کہ سکیبیز کی زبردست خارش رات بھر سونے نہیں دیتی، اور مریض صبح سویرے بھاگم بھاگ ڈاکٹر کے پاس خارش کے علاج (kharish ka ilaj) کیلیئے آن پہنچتا ہے۔ سکیبیز دنیا بھر میں سالانہ تقریباً 300 مِلین لوگوں کو متاثر کرتی ہے۔ پاکستان میں سکیبیز عام ہے اور بہت سے مریض درست رہنمائ نہ ملنے کی وجہ سے لمبے عرصے تک اِس خارش کا عذاب بھگتتے رہتے ہیں۔


Symptoms of Scabies in Urdu

سکیبیز کی علامات

سکیبیز (scabies) کی سب سے واضح علامت خارش ہے، جو عموماً چہرے پر نہیں ہوتی۔ یہ خارش رات کے وقت شدید ہو جاتی ہے اور جب جِسم رضائ یا کمبل کے استعمال سے گرم ہو جاتا ہے، تو یہ خارش مزید بڑھ جاتی ہے۔ اس خارش کا آغاز سکیبیز کی انفکشن ہونے کے تین یا چار ہفتے بعد ہوتا ہے۔ اگر کسی کو سکیبیز دوسری دفعہ ہو رہی ہو، تو خارش انفکشن کے فوراً بعد شروع ہو سکتی ہے۔

سکیبیز کی خارش جسم کے کچھ حصوں میں خصوصی طور پر زیادہ ہوتی ہے۔ ھاتھ کی انگلیوں کے بِیچ میں، کلایئوں پر، کہنیوں پر، بغلوں میں،سینے پر، کولہوں پر اور پیشاب کی جگہ پر سکیبیز اپنا بھرپور وار کرتی ہے۔ جِلد پر دانےاور چھوٹے سوراخ جو دراصل سکیبیز کے کِیڑے کے بِل (گھر) ہوتے ہیں، دیکھنے کو مِل سکتے ہیں۔ مَردوں کی پیشاب کی جگہ پر ابھرے ہوئے دانے نہایت عام طور دیکھنے کو مِلتے ہیں۔ سکیبیز کی خارش چونکہ بہت سخت ہوتی ہے، اس لیئے عام طور مریض کی جِلد کی اُوپری سطح خارش کرنے کی وجہ سے پَھٹ جاتی ہے۔ چھوٹے بچوں میں سکیبیز کے دانے ھتھیلیوں اور تلووں پر بھی بن سکتے ہیں۔

Cause of scabies in Urdu

سکیبیز کیوں ہوتی ہے؟

طِبی اصطلاح میں سکیبیز (scabies) کے جراسیم/کیڑے کو Sarcoptes Scabiei کہتے ہیں۔ کریمی رَنگ کا یہ کِیڑا تقریباً 0.4mm کے سایئز کا ہوتا ہے جسے خوردبِین کے بغیر بھی دیکھا جا سکتا ہے۔ اس کی کُل آٹھ ٹانگیں ہوتی ہیں۔ اِسکی مادہ اِنسانی جِلد میں سوراخ (Burrows)کر کے گھر بناتی ہے اور پھر اِس میں 40 سے 50 انڈے دیتی ہے۔ مادہ کی زندگی تقریباً 4 سے 6 ہفتے ہوتی ہے۔ انڈے دینے کے 3 سے 4 دن میں اِن سے بچے (Larvae) نِکل آتے ہیں جو جِلد میں مزید سوراخ بناتے ہیں۔

تقریباً 4 دن میں یہ بچے بڑے ہو جاتے ہیں۔ اِس مرحلے پر یا تو یہ بچے اُسی انسان کی جِلد پر مزید نسل کَشی کرتے ہیں، یا پھر خارش کرنے یا کسی دوسرے اِنسان کی جِلد سے رابطے میں آنے کی وجہ سے دوسرے اِنسان تک پہنچ جاتے ہیں اور وہاں نسل کَشی شروع کر دیتے ہیں۔

یہ کیڑا اِنسانی جِلد کے اُن حصوں پر رہنا پسند کرتا ہے جہاں بال کم ہوں یا بالکل نہ ہوں۔ ایک اندازے کے مطابق سکیبیز سے متاثرہ کسی بھی شخص پر ایک وقت میں تقریباً ایک درجن مادہ کیڑے موجود ہوتے ہیں۔ اگر اس کیڑے کو اِنسانی جسم سے نکال بھی لیا جائے، تو یہ 24 سے 36 گھنٹے زِندہ رہ سکتا ہے۔ عام طور پر سکیبیز (scabies) کے پھیلاؤ کی وجہ زیادہ دیر تک رہنے والا جسمانی رابطہ (جیسے ہاتھ پکڑ کر رکھنا) یا ایک ہی بستر پر سونا ہوتا ہے۔

Scabies treatment in Urdu

علاج ( Kharish ka ilaj )

جہاں تک علاج کا تعلق ہے، میرا مشاہدہ ہے کہ سکیبیز کے مریض کو جب تک بیماری کی نوعیت مکمل طور پر نہ سمجھائ جائے، کامیاب علاج بہت مُشکل ہوتا ہے۔ اِس کی وجہ یہ ہے کہ زیادہ تر مریض اِسے معمولی خارش سمجھ کر ادھورا علاج کرتے ہیں، جس کی وجہ سے سکیبیز (scabies) ایک دفعہ بہتر ہونے کے بعد دوبارہ لَوٹ آتی ہے۔ پاکستان میں اِس کے علاج کیلیئے مختلف ادویات کا استعمال کیا جاتا ہے جس میں کھانے اور جسم پر لگانے والی ادویات شامِل ہیں۔

سکیبیز کا مریض بہت آسانی سے مکمل طور پر صحت یاب ہو جاتا ہے، بشرطیکہ وہ اپنے جِلد کے ڈاکٹر کی بتائ ہوئ ھدایات پر مکمل طور پر عمل کرے۔ اِس سلسلے میں ایک اھم چیز جِلد پر لگانے والی ادویات کا درست استعمال ہے۔ سکیبیز کے علاج کیلیئے لگائے جانے والے لوشن یا کریم کے درست استعمال کا طریقہ جاننے کیلیئے یہاں کلک کریں۔بہتر یہی ہے کسی بھی مرض کے علاج کیلیئے خود سے کوشش مت کریں۔ درست تشخیص اور علاج کیلیئے اپنے معالج سے رابطہ کریں۔

یہ تحریر مفادِعامہ کیلیئے تیار کی گئی ہے۔ آپ اسے مصنف اور ویب سائیٹ کے نام سمیت اپنے احباب کیساتھ شیئر کر سکتے ہیں۔

جُملہ حقوق محفوظ ہیں۔


Skype

Clicking Subscribe button will subscribe you to our marketing campaigns as well.