Eczema in Urdu, Kharish ka ilaj, ایکزیما / چمبل کا علاج


ایکزیما سے مراد جِلد کی سوزش ہے جو جِلد کی خارش، درد، خُشکی، سُرخی، جِلد کے پَھٹنے، جِلد پر چِھلکے بننے، جِلد کے موٹے ہونے، جِلد سے پانی نکلنے، جِلد پر دانے بننے یا جِلد پر پانی والے چھالے بننے کی صورت میں ظاہر ہوتی ہے۔ ایکزیما کی بہت سی اقسام ہیں لیکن ہر قسم کے ایکزیما کی وجہ کا تعین کرنا ممکن نہیں ہوتا۔ پاکستان میں ایکزیما نہایت عام ہے اور شائد ہی کوئ دِن ایسا گزرتا ہوگا جِس دِن میں اپنے کلینک پر ایکزیما کا مریض نہ دیکھوں۔ بچوں میں پائے جانے والے ایکزیما کی اقسام بڑوں میں پائے جانے والے ایکزیما سے مختلف ہو سکتی ہیں۔ اِسی طرح مختلف پیشوں سے وابسطہ لوگوں میں پایا جانے والا ایکزیما بھی ایک دوسرے سے مختلف ہو سکتا ہے۔

ہمارے ماحول میں موجود مختلف Irritants اور Allergens جِلد پر اثرانداز ہو کر اِس میں ایکزیما کےعمل کو شروع کر سکتےہیں۔ کُچھ جِینیاتی عوامل بھی اِس سلسلے میں اپنا کردار ادا کرتے ہیں۔ اِس لیئے جب آپ ایکزیما کے علاج کیلیئے کِسی معالج سے رجوع کریں، تو اُسے اپنا پیشہ، اپنے اِرد گِرد کے ماحول میں پائ جانے والی اشیا اور اپنے فارغ وقت میں کی جانے والی سرگرمیوں کے بارے میں ضرور بتائیں ۔ اِس سے آپکے معالج کو آپکے ماحول میں موجود Irritants اور Allergens کو پہچاننے میں مدد ملے گی اور وہ آپکی بہتر رہنمائ کر سکے گا۔

آپکی سہولت کیلیئے Irritants اور Allergens کی ایک لِسٹ اِس تحریر کے آخر میں دی گئی ہے۔

ایکزیما کی سب سے نمایاں علامت جِلد میں ہونے والی خارش ہے جو نیند اور طرزِحیات پر اثراندازہو سکتی ہے ۔ بہت سے مریضوں میں ایکزیما ایک لمبے عرصے تک چلتا ہے اور اِس دوران بڑھتا گھٹتا رہتا ہے۔ ایکزیما کی ایک خاصیت یہ بھی ہے کہ یہ جِلد پر جِس جگہ سے شروع ہوتا ہے، وہاں محدود نہیں رہتا؛ بلکہ وہاں سے دُور جِلد کے کِسی نئے مقام پر بھی ظاہر ہونے لگتا ہے۔ اِسطرح کا پھیلاؤ عام طور پر ٹانگوں اور پیروں کے ایکزیما میں زیادہ دیکھنے میں آتا ہے۔

صحت مند جِلد جِسم کے باہر سے حملہ آور ہونے والے جراسیموں کیلیئے رکاوٹ ہوتی ہے۔ ایکزیما سے متاثر ہونے کی صورت میں جِلد کی یہ صلاحیت متاثر ہو جاتی ہے، جِس کے نتیجے میں وائرس، پھپھوندی یا بیکٹیریا کا حملہ بآسانی ہو سکتا ہے۔ ایسی صورت میں ایکزیما مزید پیچیدہ صورتِحال اختیار کر لیتا ہے اور اِسکی تشخیص اور علاج مزید مشکل ہو سکتا ہے۔ کچھ اقسام کے ایکزیما میں اگر جِلد کی کیفیت کو دیکھ کر اِس کی تشخیص کرنا ممکن نہ ہو، تو آپکا معالج آپکو سکن بائیوپسی (Skin Biopsy) کروانے کا مشورہ دے سکتا ہے۔ سکن بائیوپسی ایک ٹیسٹ کا نام ہے جِس میں جِلد کے ایک چھوٹے سے ٹکڑے کو لیباریٹری بھیجا جاتا ہے تاکہ مرض کی تشخیص کی جا سکے۔

علاج

آپ جب ایکزیما کے علاج کیلیئے اپنے معالج کے پاس جائیں تو اُسے اِس بات سے ضرور آگاہ کریں کہ آپ نے اپنے ایکزیما کے علاج کیلیئے پہلے کون کون سی ادویات استعمال کی ہیں۔ مزید یہ کی اپنے ماحول میں موجود Irritants اور Allergens کے بارے میں ضرور آگاہ کریں۔

یہ بات یاد رکھیں کہ ہر خارش ایکزیما نہیں ہوتی۔ جِسم کے جِس حصے میں ایکزیما ہو، اُسے آرام دینا علاج میں مدد گار ثابت ہوتا ہے۔ اگر جِلد پر پانی والے چھالے ہوں یا جِلد سے پانی رِستا ہو، تو گیلی اور ٹھنڈی پٹیاں متاثرہ جِلد پر رکھنا مددگار ثابت ہوتا ہے۔ مکمل علاج کیلیئے اپنے جِلد کے ڈاکٹر سے رہنمائ حاصل کریں اور وہ جو ادویات تجویز کرے اُن کو استعمال کریں۔ جِن اشیاء کے خلاف آپ کی جِلد حساس ہو اُن سے پرہیز ضروری ہے، ورنہ ایک دفعہ علاج ہونے کے بعد بھی ایکزیما دوبارہ لوٹ کر آ سکتا ہے۔

آپ نے ایکزیما کے بارے میں جانا۔ ہم امید کرتے ہیں کہ یہ معلومات آپ کیلیئے فائدہ مند ثابت ہوں گی۔ ہماری کوشش ہے کہ ہم پاکستانی قارئیں کو نہ صرف بہترین طِبی معلومات فراحم کریں، بلکہ اُنہیں بہترین طِبی آلات بھی مہیا کریں۔

کیا آپ ہمارے پاس فروخت کیلیئے دستیاب اعلٰی کوالٹی کے طِبی آلات دیکھنا پسند کریں گے؟

ہمارا آن لائن سٹور دیکھنے کیلیئے یہاں کلک کریں۔

یہ تحریر مفادِعامہ کیلیئے تیار کی گئی ہے۔ آپ اسے مصنف اور ویب سائیٹ کے نام سمیت اپنے احباب کیساتھ شیئر کر سکتے ہیں۔

جُملہ حقوق محفوظ ہیں۔


Skype

Clicking Subscribe button will subscribe you to our marketing campaigns as well.