Advertisement

Clopidogrel / Plavix in Urdu کلوپیڈاگریل کیا ہے اور کیسے کام کرتی ہے؟


پاکستان میں کلوپیڈاگریل کے مُندرجہ ذیل برانڈ دستیاب ہیں:

AGRANIL, ALFAGREL, APLATE, CARDRIL, CAYGRIL, CLAP, CLAVIX, CLOBIS, CLODOGRIL, CLOGREL, CLOPEG, CLOPATE, CLOPID, CLOPIDO, CLOPIDRO, CLOPISEL, CLOPIVAX, CLOPIWIN, CLOPLAD, CLOTLES, CLOTNIL, CLOXIDIL, COCARD, CUPID, CLOPIDOGREL USES, DEPLAT, DISCLOT, DOGREL, EN-CLOT, EXPLAT, EXTRAC, FARLLOP, FLEXIFLOW, GREL, KUMPLAT, INCLOT, ISTEBLIX, LESFIBRO, LOCLOG, LOCRIL, LOWPLAT, MARKCLOP, NILCLOT, NOCLOT, NORPLAT, NT.CLOT, OGREL, ORDOGRIL, PAILET, PIDOGREL, PLAFIX, PLATAGG-I, PLATLO, PLAVERYL, PLAVIX, PLETOZ, PLODREL, PREVENT, PREVIX, PROGREL, PROTOCARD, RAYPLAT, REVIVE, RIPLAN, ROGRIP, SEACLOP, STROVIX, THROMBONIL, THROMBONIL, UNIPLATE, XIVARIL.

کلوپیڈاگریل (Clopidogrel) کو اینٹی پلیٹلیٹس ایجنٹ (Antiplatelets agent) کے طور پر جانا جاتا ہے۔ پلیٹلیٹس (Platelets) خون میں موجود وہ ذَرات ہیں جو زخم کے مقام پر جمع ہو کر خون رِسنے کے عمل کو روکتے ہیں۔ اِس مقصد کے حصول کیلیئے پلیٹلیٹس کا ایک جگہ جمع ہونا ضروری ہوتا ہے۔ اِس دوا کے استعمال سے پلیٹلیٹس کی ایک جگہ جمع ہونے کی صلاحیت کم ہو جاتی ہے؛ نتیجتہً خون رِسنے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔

طبی ضرورت کے تحت کلوپیڈاگریل (Clopidogrel) کا استعمال اُن کیفیات میں کروایا جاتا ہے جِن میں پلیٹلیٹس کا ایک جگہ جمع ہونا نُقصان دہ ہو؛ جیسا کہ دل کی شریانوں کے امراض میں۔ دل کی شریانوں میں پلیٹلیٹس کے جمع ہونے سے خون کی نالیاں تنگ ہونے لگتی ہیں اور خون کے بہاوٴ میں خلل آ جاتا ہے، جِس سے انجائنا (سینے کا درد) یا دل کا دورہ پڑ سکتا ہے۔ ایسے میں اِس دوا کے اِستعمال سے چونکہ پلیٹلیٹس جمع نہیں ہو پاتیں، اِس لیئے دل کا دورہ پڑنے کا خطرہ کم ہو جاتا ہے۔ اِس کے علاوہ اِس دوا کا استعمال اُن لوگوں میں احتیاطاً کروایا جاتا ہے جِن کو پہلے دل کا دورہ پڑا ہو اور دوبارہ پڑنے کا خطرہ ہو، یا جو اپنی اینجیوپلاسٹی (Angioplasty) کروا چکے ہوں۔

کلوپیڈاگریل (Clopidogrel) استعمال کرنے (کھانے) کے تقریباً دو گھنٹے بعد تیز ترین اثر دکھاتی ہے۔ اِس دوا کا تقریباً ۵۰ فیصد حصہ جسم میں جذب ہوتا ہے اور جگر میں پہنچنے کے بعد ٹوٹ پھوٹ کے عمل سے گزرتا ہے۔ اِس ٹوٹ پھوٹ کے بعد یہ دوا محرک ہوتی ہے اور اپنا اثر دکھاتی ہے۔ جسم سے اِس دوا کا اِخراج پیشاب اور پاخانہ کے راستے ہوتا ہے۔ اِس دوا کا استعمال روکنے کے تقریباً ۵ دن بعد تک اِس کا اثر باقی رہتا ہے۔

کلوپیڈاگریل (Clopidogrel) کا استعمال اُن لوگوں میں احتیاط سے کرنا چاہیئے جِن میں پہلے سے خون بہنے کا کوئ عارضہ ہو۔ جِن لوگوں کے جسم میں کوئ پرانا زخم ہو اُن میں بھی احتیاط بہتر ہے۔ اِسی طرح، وہ لوگ جن کی عنقریب جراحی (سرجری یا آپریشن) متوقع ہو، اُن میں بھی احتیاط بہتر ہے۔

کلوپیڈاگریل (Clopidogrel) کے سائیڈ افیکٹ Side Effects

اِس دوا کے استعمال سے مندرجہ ذیل سائیڈ افیکٹ سامنے آ سکتے ہیں:

۔ جسم کے اندرونی یا بیرونی حصوں سے بآسانی خون نکلنا

۔ مسُوڑوں یا ناک سے خون نِکلنا

۔ اچانک سر درد

۔ جِلد پر جامنی رنگ کے داغ نمودار ہونا

۔ پیٹ درد

۔ پیچش یا قبض

۔ پاخانہ کا رنگ سیاہ ہونا

۔ دل کی دھڑکن تیز ہونا

۔ بخار ہونا

۔ اُلٹی یا خون کی اُلٹی ہونا

۔ دورہ پڑنا،نظر متاثر ہونا، بے حوش ہونا یا بولنے میں خلل آنا

۔ چہرے، زبان یا گلے پر سوجن ظاہر ہونا

اگر طبیعت زیادہ خراب ہو تو فوراً اپنے معالج سے رجوع کریں اور اسے اپنی کیفیت سے آگاہ کریں۔

ابھی شیئر کریں اور دوسروں کی آگاہی میں اپنا کردار ادا کریں۔ شکریہ۔


Skype

Clicking Subscribe button will subscribe you to our marketing campaigns as well.