Metoclopramide / Maxolon in Urdu میٹوکلوپریمائیڈ کیا ھے اور کیسے کام کرتی ھے؟


Metoclopramide brands in Pakistan

پاکستان میں میٹوکلوپریمائیڈ کے مندرجہ ذیل برانڈ دستیاب ھیں:

CARA-MID, CLOPAN, CLOPREL, CLOTIDE, COVREM, ELPOMIDE, EMETAL, EMILON, FRECLOMIDE, GASTROLON, I-MIDE, KOHICLON, MATAMEX, MAXACLOR, MAXOCAM, MAXOLON, MAXOMIDE, MAXOWIN, M-CLON, MEDICLOP, MECOMIDE, MEDICLOP, METALON, METCLOMIDE, METOCARE, METOCLON, METOCIL, METOCLOP, METOMIDE, METOPLAXIL, METPRIDE, METOPERM, METOREX, MOBIL, PLASIL, PREMO, REGELAN, STOMAC, UNEXOLONE, VOMILIDE, ZITALAN.

میٹوکلوپریمائیڈ کا شمار قے (اُلٹی) روکنے والی ادویات میں کیا جاتا ھے۔ یہ دماغ پر اثرانداز ھو کر قے یا متلی کا احساس پیدا ھونے سے روکتی ھے۔

Metoclopramide Uses in Urdu

میٹوکلوپریمائیڈ کا اِستعمال مندرجہ ذیل کیفیات میں کروایا جاتا ھے: - متلی یا قے کو روکنے کیلیئے - کیموتھراپی کی وجہ سے ھونے والی قے یا متلی کو روکنے کیلیے - ریڈیوتھراپی کی وجہ سے ھونے ولی قے یا متلی کو روکنے کیلیے - مائگرین (سر درد) کی وجہ سے ھونے والی قے یا متلی کو روکنے کیلیے

- ذیابیطس کے مریضوں کو ھونے والی (Diabetic Gastroparesis) سینے کی جلن، قے اور متلی کی کیفیت - معدہ میں زیادہ تیزابیت کیوجہ سے ہونے والی (Gastroesophageal reflux disease: GERD) خوراک کی نالی کی جلن

Metoclopramide mechanism of action in Urdu

میٹوکلوپریمائیڈ کیسے کام کرتی ھے؟

میٹوکلوپریمائیڈ دماغ کے area postrema پر اثر انداز ھو کر وہاں پائے جانے والے dopamine D2 اور serotonin 5-HT3 receptors کی تحریک میں کمی کا سبب بنتی ھے جس کے نتیجے میں قے یا متلی کے احساس میں کمی آنے لگتی ھے۔

میٹوکلوپریمائیڈ دوا کے اثر سے نظامِ انہضام کے پٹھوں میں تناؤ کم ھونے لگتا ھے اور معدہ جلدی خالی ھوتا ھے (increased gastric emptying)۔ میٹوکلوپریمائیڈ معدہ میں تیزابیت بڑھائے بغیرنظامِ انہضام کی حرکت میں تیزی لاتی ھے۔

جسم میں داخل ھونے کے بعد میٹوکلوپریمائیڈ جگر میں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ھوتی ھے۔ منہ کے ذریعے کھائ جانے والی میٹوکلوپریمائیڈ کی تقریباً 85 فیصد مقدار گُردوں کے ذریعے جسم سے خارج ھوتی ھے۔ صحت مند لوگوں میں میٹوکلوپریمائیڈ کھانے کے تقریباً 6 گھنٹے بعد اِس دوا کی آدھی مقدار جسم سے خارج ھو چکی ھوتی ھے۔

جن لوگوں کو گُردوں کا عارضہ لاحق ھو، اُن کے جسم سے میٹوکلوپریمائیڈ کے اخراج میں تاخیر ممکن ھے۔ لہٰذا ان لوگوں میں اس دوا کی خوراک کم کرنی پڑتی ھے۔

Metoclopramide Dosage

میٹوکلوپریمائیڈ کی خوراک کے سلسلے میں معلومات کیلیئے اپنے معالج سے رجوع کریں۔

عام طور پر بہتر یہی ھوتا ھے کہ میٹوکلوپریمائیڈ خالی پیٹ لی جائے اور اس کے بعد آدھا گھنٹہ کچھ نا کھایا جائے۔

میٹوکلوپریمائیڈ دوا کے استعمال کا دورانیہ اگر 5 دن سے زیادہ ھو تو اپنے معالج سے مشورہ کرنا بہتر ھے۔ بڑوں میں روزانہ کی کُل خوراک 30 ملی گرام سے زیادہ نہیں ھونی چاھیئے۔ عام طور پر میٹوکلوپریمائیڈ کو روزانہ تین مرتبہ تک استعمال کروایا جاتا ھے۔ اگر میٹوکلوپریمائیڈ کی خوراک لینے کے بعد قے (اُلٹی) ھو جائے تو بہتر یہی ھے کہ میٹوکلوپریمائیڈ فوراً دوبارہ نہ کھائ جائے بلکہ 6 گھنٹے کا انتظار کیا جائے۔

بچوں کیلیئے میٹوکلوپریمائیڈ کی خوراک نسبتاً کم ھوتی ھے جس کا تعین آپ کا معالج بہتر طور پر کر سکتا ھے، لہٰذا اُسی کی ھدایات پر عمل کریں۔ ایک سال سے کم عمر کے بچوں میں میٹوکلوپریمائیڈ کا استعمال مناسب نہیں سمجھا جاتا۔

جن لوگوں کے گردے یا جگر بیماری سے متاثرہ ھوں، اُن کیلیئے میٹوکلوپریمائیڈ کی خوراک کو کم کرنے کی ضرورت ھوتی ھے۔

Metoclopramide contraindications in Urdu

مندرجہ ذیل کیفیات میں میٹوکلوپریمائیڈ کو استعمال نہیں کرنا چاھیئے:

- اگر آپ کو میٹوکلوپریمائیڈ دوا یا اس کے اجزاء سے حساسیت ھو

- اگر معدہ یا آنتوں میں زخم ھو - اگر معدہ یا آنتوں کے اندر خوراک گزرنے میں رکاوٹ ھو - pheochromocytoma - ٹیومر کی صورت میں

- (ایک اعصابی بیماری ( tardive dyskinesia) جس میں چہرہ اور جبڑا غیر ارادی طور پر حرکت کرتا ھے

- مرگی کے مرض میں

- اگر آپ Parkinson’s disease میں مبتلا ھوں

- اگر آپ Parkinson’s disease کی دوا levodopa استعمال کر رھے ھوں

Metoclopramide Missed Dose

اگر آپ میٹوکلوپریمائیڈ کی ایک یا زیادہ خوراکیں لینا بھول جائیں تو اگلے وقت پر دگنی یا زیادہ خوراک ھرگز مَت لیں، بلکہ صرف اُسی وقت کی تجویز کردہ خوراک لیں۔

Metoclopramide Overdose

میٹوکلوپریمائیڈ کی خوراک زیادہ کھا لینے کی صورت میں فوراً اپنے معالج سے رجوع کریں۔ خوراک زیادہ لینے کی وجہ سے مندرجہ ذیل علامات سامنے آ سکتی ھیں:

- فریبِ نظر میں مبتلا ھونا (Hallucinations)

- غنودگی طاری ھونا

- نیم بے ھوشی کی کیفیت

- کنفیوز ھونا

- قلب سے متعلق مسائل

- بے قابو حرکات

Metoclopramide warning signs: consult your doctor immediately

میٹوکلوپریمائیڈ کے استعمال سے اگر مندرجہ ذیل کیفیات میں سے کوئ بھی سامنے آئے تو فوراً اپنے معالج سے رابطہ کریں:

- سر اور گردن کی بے قابو حرکات (Extrapyramidal disorders)

- بخار، بلند فشارِ خون، دورہ پڑنا، پسینہ آنا، تھوک زیادہ آنا

- جلد پر شدید خارش، چہرہ یا ھونٹوں پر سوجن، سانس لینے میں مشکل ھونا

- اگر جسم نیلا پڑنے لگے، مریض کنفیوز ھو اور ذھنی حالت متاثر ھو جائے، -سُستی اور غنودگی طاری ھونے لگے (یہ Methemoglobinemia کی علامات ھو سکتی ھیں)

Inform your doctor before starting Metoclopramide

اگر مندرجہ ذیل میں سے کوئ بھی کیفیت آپ کو لاحق ھو تو میٹوکلوپریمائیڈ کا استعمال شروع کرنے سے پہلے اپنے معالج کو آگاہ کریں:

- اگر جسم میں نمکیات کی سطح غیر متوازن ھو (Electrolyte imbalance) - اگر آپ کو قلب کا کوئ عارضہ لاحق ھو - اگر آپ کوئ ایسی دوا استعمال کر رھے ھوں جو قلب پر اثر کرتی ھو - اگر آپ کو دماغ یا اعصاب کا کوئ عارضہ لاحق ھو - اگر آپ کو جگر کا کوئ عارضہ لاحق ھو - اگر آپ کو گُردوں کا کوئ عارضہ لاحق ھو Metoclopramide drug interactions in Urdu

ادویات کی مندرجہ ذیل اقسام کے ساتھ میٹوکلوپریمائیڈ کا استعمال مسائل کا سبب بن سکتا ھے لہٰذا اپنے معالج سے مشورہ ضرور کر لیں:

- رعشہ کی بیماری (Parkinson’s disease) کیلیئے لی جانے والی ادویات جیسے Levodopa

- پیٹ میں پڑنے والے مروڑ سے متعلق ادویات (anticholinergics)

- مورفین (Morphine) یا اس سے ملتی جلتی ادویات جو شدید درد کی کیفیت میں استعمال کروائ جاتی ھیں

- سکون آور ادویات

- ذھنی یا دماغی امراض سے متعلق ادویات

- ذھنی دباؤ یا ڈیپریشن کی ادویات (paroxetine or fluoxetine)

- ڈیجوکسن دوا (Digoxin)

- سائیکلوسپورن دوا (cyclosporin)

- میٹوکلوپریمائیڈ کے ساتھ الکوحل (شراب) کے استعمال سے میٹوکلوپریمائیڈ سے ھونے والی غنودگی کی کیفیت میں مزید شدت آ سکتی ھے۔

Metoclopramide use during pregnancy and Lactation

حمل کے دوران میٹوکلوپریمائیڈ کا استعمال

اگر صحت کی کیفیت ایسی ھو کہ میٹوکلوپریمائیڈ کا استعمال ضروری ھو تو حمل کے دوران میٹوکلوپریمائیڈ کا استعمال کیا جا سکتا ھے مگر اس کیلیئے اپنے معالج کی رائے ضرور لیں۔

بعض معالج میٹوکلوپریمائیڈ اُن دودھ پلانے والی ماؤں کو بھی استعمال کرواتے ھیں جِن کا دودھ کم ھو۔ اُن کی رائے میں ایسا کرنے سے دودھ کی مقدار بڑھ جاتی ھے۔

چونکہ میٹوکلوپریمائیڈ ماں کے دودھ میں خارج ھوتی ھے، لہٰذا دودھ پلانے والی ماؤں میں اس دوا کا استعمال مناسب نہیں سمجھا جاتا کیونکہ یہ بچے کی صحت کو متاثر کر سکتی ھے۔

Occupational advice about Metoclopramide

پیشہ ورانہ ھدایات برائے میٹوکلوپریمائیڈ

چونکہ میٹوکلوپریمائیڈ کے استعمال سے غنودگی طاری ھوتی ھے، چکر آتے ھیں اور پٹھوں کی حرکات بے قابو ھو سکتی ھیں لہٰذا ایسی کیفیت میں گاڑی چلانے یا کوئ مشین وغیرہ چلانے سے اجتناب کرنا بہتر ھے۔

Metoclopramide Side Effects in Urdu

میٹوکلوپریمائیڈ کے استعمال سے مندرجہ ذیل سائیڈ افیکٹ سامنے آ سکتے ھیں:

- غنودگی طاری ھونا

- ذھنی دباؤ یا ڈیپریشن ھونا

- بے قابو حرکات یا پٹھوں میں سختی آنا

- جسم کانپنا

- سخت بے چینی ھونا

- فشارِ خون کم ھونا

- پیچش ھونا

- کمزوری محسوس کرنا


Skype

Clicking Subscribe button will subscribe you to our marketing campaigns as well.